28

بھارت میں اسپتال کے عملے نے نوزائیدہ بچے اور ماں کی تیزاب سے صفائی کردی

نئی دہلی: 22 مئی کو متاثرہ خاتون سہاسنی کو درد زہ محسوس ہوا جس پر اہل خانہ نے خاتون کو پرائمری ہیلتھ سینٹر منتقل کیا جہاں خاتون نے رات 2:10 منٹ پر بچی کو جنم دیا۔
اسپتال انتظامیہ نے اہل خانہ سے سرسوں کا تیل منگوایا جو رات زیادہ ہونے کی وجہ سے اہل خانہ فراہم نہیں کرسکے، جس پر اسپتال انتظامیہ نے بچی اور ماں کے جسم کی صفائی تیزاب سے کردی گئی، جس کے باعث بچی کے جسم کا زیادہ تر حصہ جھلس گیا۔
واقعہ بھارتی ریاست بہار میں پیش آیا جہاں اسپتال انتظامیہ نے اہل خانہ کی جانب سے سرسوں کا تیل فراہم نہ کرنے پر چند لمحوں قبل جنم لینے والی بچی اور ماں کی تیزاب سے صفائی کردی۔
بچی کے جسم پر پھوڑے نکلے تو انتظامیہ نے ماں اور نوزائیدہ بچی کو دوسرے اسپتال منتقل کیا تاہم بچی کی بگڑتی حالت دیکھتے ہوئے دوسرے اسپتال نے بھی بچی کو داخل کرنے سے انکار کردیا جس پر اہل خانہ نے نجی اسپتال میں متاثرہ خاتون اور بچی کو علاج کی غرض سے داخل کرایا۔
تیزاب جسم پر لگتے ہی جلن شروع ہوئی تو بچی نے بلک بلک کر رونا شروع کردیا اور خاتون نے جسم پر جلن ہونے کی شکایت کی مگر انتظامیہ پر کوئی فرق نہیں پڑا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں